110

ملک میں کرونا کیسز کی بڑھتی ہوئی شرح، لاک ڈاؤن مزید سخت

ملک بھر میں کرونا وائرس تیزی سے پھیلنے لگا ہے۔ ملک میں کرونا وائرس کی بڑھتی ہوئی شرح، لاک ڈاؤن مزید سخت کردیا گیا۔

ملک میں اس وقت فعال کیسز کی شرح% 10.20 تک جا پہنچی۔ پچھلے 24 گھنٹوں میں 142 زندگیاں لقمہ اجل بنیں۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق  پچھلے 24 گھنٹوں میں 43,981 ٹیسٹ کیے گئے جس میں 4487 افراد کا کرونا  ٹیسٹ مثبت آیا۔

کرونا وائرس کی تشویشناک صورتحال اور لوگوں کی جانب سے بے احتیاطی کے باعث ملک بھر میں فوج طلب کرلی گئی جبکہ لاک ڈاؤن مزید سخت کردیا۔

شہریوں کی بے احتیاطی اور کرونا وائرس: وزیراعظم نے فوج طلب کرلی

واضح رہے کہ کرونا کے باعث جن علاقوں میں کرونا وائرس کی شرح 5% سے زیادہ ہے وہاں اسمارٹ لاک ڈاؤن کیا جارہاہے۔

سندھ حکومت نے صوبے بھر کے تمام تعلیمی ادارے، اسکول، کالج اور جامعات ، بند کردی ہیں۔  دفاتر میں صرف 20% حاضری کی اجازت دی گئی ہے۔ سندھ کے بعد پنجاب میں بھی تعلیمی ادارے بند۔

وزیر تعلیم شفقت محمود کی جانب سے او لیول کے ہونے والے تمام امتحانات کو اکتوبر تک ملتوی کردیا گیا ہے۔ ملک بھر میں ہونے والے تمام امتحانات 15 جون تک ملتوی، صرف اے ٹو کے امتحان ہونگے۔

کرونا وائرس کی بڑھتی ہوئی شرح، لاک ڈاؤن مزید سخت

 وزیر تعلیم شفقت محمود کا کہنا تھا کہ نویں، دسویں، گیارہویں اور بارہویں کے امتحانات جولائی اور اگست  تک جاسکتے ہیں۔

مئ میں دربارہ جائزہ لیں گے حالات کو دیکھتے ہوئے آئندہ لائحہ عمل طے کیا جائے گا ۔ جامعات کے داخلے جنوری میں ہونگے۔

اس کے علاوہ عید کے موقع پر حکومت نے سیاحت پر بھی پابندی عائد کر دی۔ ذرائع کے مطابق ملک بھر کے سیاحتی مقامات 8 مئ سے 16 مئ تک بند رہیں گے۔

عید پر 5 چھٹیاں ہونگی لیکن عوام اسے گھر پر رہ کر گزارے حکومت کی عوام سے اپیل۔ پبلک ٹرانسپورٹ نہیں چلیں گی۔ سیاحتی مقامات، ہوٹلز اور پارک مکمل بند رہیں گے۔

مزید اس سال مساجد میں اعتکاف پر پابندی عائد ہوگی۔ حکومت نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ گھر پر ہی اعتکاف کریں۔ اس کے علاوہ جمعہ اور عید کی نماز میں ایس او پیز کی پابندی لازمی قرار دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں